جمعہ, نومبر 23, 2012

کر دو اسے اندر ۔۔۔۔

بڑا بولے تو مچھندر
غریب بولے تو بندر
کر دو اسے اندر ۔۔۔۔

کب بدلے گا پاکستان

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں