اتوار، 26 اکتوبر، 2014

گردے اور کپورے

kirishannagar1جس جس کو شوق ہے گردے کپورے کھانے کا وہ آجائے میدان میں ۔۔۔۔ یہ گردے کپورے ہمارے علاقے کی فوڈ سٹیریٹ میں تازہ بہ تازہ بنائے جاتے ہیں ۔۔( تازہ بہ تازہ سے غلط مطلب اخذ نہ کا جاوے ) ۔

جب سے انسان و جانور کی پیدائش کا عمل وجود میں آیا ساتھ ہی گردے کپوے بھی لازم و ملزوم ٹھرے ۔۔ اب کوئی گردوں کپوروں کو حرام قرار دیتا ہے کوئی مکروہ اور کوئی ناپسندیدہ ۔۔۔۔
بہت سے حکیموں کو دیکھا گیا ہے کہ وہ گردوں اور کپوروں کا کھانا مردانہ طاقت کے لئے مفید قرار دیتے ہیں ۔

ہمارے دوست کے ایک ابا ہوا کرتے تھے عمر تو ان کی کوئی ستر کے قریب تھی مگر شوق جوانی نہ جاتا تھا۔انہیں ہم اکثر و اوقات سری پائے ، گردے کپورے شوق سے کھاتا دیکھا کرتے تھے۔کبھی کبھار جوش میں ہوتے تو پنجابی میں کہا کرتے تھے کہ ‘‘ پتر آج تہاڈی چاچی نے شاباش دیتی جے ‘‘ ( آج تمہاری چاچی نے شاباش دی ہے ) ۔۔
آخر کار وہ شاباش لیتے لیتے ایک دن قبر میں جاسوئے ۔۔۔ چاچی اب بھی زندہ اور ہٹی کٹی ہے ۔

دیکھا یہ گیا ہے کہ آج کل بڑے بوڑھوں سے زیادہ نوجوان لوگ گوشت سے زیادہ سری پائے اور گردے کپوروں کے زیادہ رسیا ہیں ۔۔اب اس میں کیا حکمت ہے یہ تو سیانے بندے ہی بتا سکتے ہیں ۔۔ویسے بعض لوگوں نے آجکل کے نوجوانوں کی کمزوری کی وجہ آیوڈین نمک کا زیادہ کھانا ( جس سے آیوڈین کی جسم میں زیادتی ) کو قرار دیا ہے جبکہ کچھ لوگوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ یہ سب پولیو کے قطروں کا کیا دھرا ہے ۔

جہاں تک رہی بات آیوڈین نمک کی تو اس پر تحقیق ضرور کی جانی چاہئے کہ کیا واقع مردوں میں کمزوری کی وجہ آیوڈین کی زیادتی تو نہیں ۔۔۔ جہاں تک بات ہے پولیو ویکسین کی تو کم از کم میں اس کی سختی سے تردید کرتا ہوں کہ یہ ایسا نہیں ہے بلکہ یہ صرف افواہ ہے کہ پولیو ویکسین مردانہ طاقت کو نقصان پہنچاتی ہے ۔

بات کوئی بھی ہو جوان رہنا کس کو پسند نہیں ۔۔۔۔۔ توآئیے گردے کپوروں سے لطف اندوز ہو کر اپنی زندگی کے چند سال کم کر کے قبروں میں جا سوئیں

سوموار، 6 اکتوبر، 2014

سماجی رابطوں کی رنگ برنگی دنیا اور ڈپریشن

facebookسماجی رابطوں کے اس جدید ترین دور اور رنگ برنگی دنیا میں جس تیزی سے نِت نئی معلومات ، سوچ ، باتوں سے ہم لوگ روزانہ مستفید ہو رہے ہیں ان کو ہضم کرنا یا ان سے فائدہ اٹھانا ہر کسی کے بس کی بات نہیں ہے ۔ بلکہ یوں کہا جائے تو بے جا نہ ہو گا کہ ان کو بہت کم لوگ برداشت کر پاتے ہیں ۔

بہت سے لوگ دوسروں کی مختلف سوچوں ، باتوں ، انداز ، عادات و اطوار ، خصوصا ایسی سوچ یا باتیں جو ان کی ذہنی سوچ سے مطابقت نہ رکھتی ہوں سے متنفر ہو کر ذہنی ڈپریشن کا شکار ہو جاتے ہیں۔

ہر انسان کی سوچ عمومی یا خصوصی دوسروں کی سوچ سے بہت کم مطابقت رکھتی ہے جس کی وجہ سے انسان اکتاہٹ کا شکار ہوجاتا ہے اور یہی اکتاہٹ جب حد سے بڑحتی ہے تو بندہ سکون چاہتا ہے۔

میری نظر میں اس کے سب سے بہتر دو حل ہیں
اگر تو آپ میں برداشت کا مادہ کم ہے اور آپ صرف اپنی ذہنی سوچ کے مطابق ہی ہر چیز چاہتے ہیں تو آپ کو چاہئے کہ کتابوں کی طرح اپنے موضوع کی کتاب تک محدود رہیں۔
دوسرا اس کا حل یہ ہے کہ دوسروں کی سوچوں کو پڑھیں اور اس سے سبق حاصل کریں ۔اگر کوئی سوچ آپ کی برداشت سے باہر ہے تو اسے نظرانداز کردیں ۔

نظراندازی خود کے لئے سکون اور دوسروں کے لئے عذاب کا باعث ہوتی ہے

جمعرات، 2 اکتوبر، 2014

پی ٹی آئی ، عمران خان ‘‘ کے سپورٹرز کون لوگ ہیں ؟

qadiani-02اس میں کوئی شک و شبہ نہیں ہے کہ ‘‘ پی ٹی آئی ، عمران خان ‘‘ کو منکرین حدیث ، قادیانیت نواز ، دہرئے ،گوہر شاہی اور مادر پدر آزاد قسم کے لوگ سپورٹ کر رہے ہیں ۔

دوہزار تیرہ کے الیکشن سے پہلے عمران خان کی جانب سے قادیانی ہیڈ کواٹرز لندن میں ان کی حمایت حاصل کرنے کے لئے ایک وفد بھیجا گیا تھا جس میں قادیانی خلیفہ مرزا مسرور احمد نے یہ انکشاف کیا تھا کہ مجھے عمران خان کی جانب سے یہ پیغام ملا تھا کہ اگر ہم اقتدار میں آئے تو اسمبلی میں آپ کے خلاف کی گئی قرارداد پر نظرثانی کریں گے۔

دوہزار تیرہ کے الیکشن سے پہلے عمران خان کی جانب سے قادیانی ہیڈ کواٹرز لندن میں ان کی حمایت حاصل کرنے کے لئے جو وفد بھیجا گیا تھا اس کی سربراہی ‘‘ نادیہ رمضان چوہدری ‘‘ جو کہ پاکستان تحریک انصاف سیکرٹریٹ عمران خان کے ساتھ کام کرتی ہیں ، کر رہی تھی ۔ان کا قادیانی خلیفہ مرزا مسرور احمد کو کہنا تھا کہ قادیانی تحریک کا جو منشور ہے وہ ہمارے منشور کے ساتھ بہت زیادہ مطابقت رکھتا ہے ۔انہوں نے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ اس الیکشن میں آپ کی کیمونٹی ہمیں سپورٹ کرے ۔

قادیانی خلیفہ نے اس ملاقات میں یہ کہا کہ جب تحریک انصاف بنی اس وقت میں پاکستان کا ناظم اعلیٰ تھا اور اس وقت عمران خان میں نے میرے پاس ایک وفد کو بھیجا کہ ہم ایک نئی پارٹی بنا رہے ہیں آپ ہمیں الیکشن میں ووٹ اور سپورٹ کریں ۔قادیانی خلیفہ کا کہنا تھا کہ میں نے انہیں باور کروایا کہ ہمارا تو ووٹ ہی نہیں ہے ۔۔ جس پر عمران خان کے ہرکارے نے کہا کہ آپ سپورٹ کریں جب ہم اسمبلی میں جائیں گے تو ہم آپ کا حق بھی دلوائیں گے۔

لندن کی بیٹھک میں نادیہ رمضان چوہدری کا پھر کہنا تھا کہ آپ ہمیں سپورٹ کریں ہمارا منشور تمام لوگوں کے لئے ہے ۔قادیانی خلیفہ کے ایک سوال کے جواب میں کہ ہماری بھی پاکستانی شہری کے حساب سے جسٹیفیکیشن ہونی چاہئے پر کہا کہ یہ ہم آپ کے لئے کر رہے ہیں ۔

qadiani-01

نوٹ ۔نادیہ رمضان چوہدری نے اپنے ویڈیو پیغام میں اپنی کہی گئی باتوں کی تردید بھی کی تھی جو کہ سراسر ایک بھونڈی اور عام آدمی کو گمراہ کرنے کی کوشش ہے ۔

دوسری جانب گوہر شاہی کا نمبر ون چیلا ‘‘ یونس گوہر شاہی ‘‘ جو کہ سرعام اللہ رسول کا مذاق اڑاتا رہتا ہے اور خانہ کعبہ کو گالیاں بکتا ہے کے ورکرز آجکل دھرنے میں بڑے بڑے بینر اٹھائے عمران خان کو سپورٹ کرتے نظر آرہے ہیں۔یونس گوہر شاہی اپنی ویڈیوز میں سرعام مسلمانوں کوگندی غلیظ گالیوں سے نواز رہا ہے ۔

دھرنے اور عمران خان کو سپورٹ کرنے والوں میں منکرین حدیث غلام احمد پرویز ، منکرین حدیث جاوید احمد غامدی کے چاہنے والوں کی بھی بڑی تعداد موجود ہے ۔جبکہ دہرئے اور مادر پدر آزاد قسم کے تمام لوگ عمران خان کو مکمل سپورٹ کر رہے ہیں ۔

عمران خان کی تحریک کا اگر ہم ایک سرسری سا جائزہ بھی لیں تو یہ کہنا بے جا نہ ہوگا کہ عمران خان کا ایجنڈا ‘‘ ارادی یا غیر ارادی طور پر ‘‘ پاکستان کی سالمیت کو نقصان پہنچانا ہے ۔سول نافرمانی کی تحریک کا بیان ہو یا ، ہنڈی کے زریعہ سے باہر پیسہ منگوانا یا بھیجنا جیسے بیان یا کہ پاکستان کے لئے گئے قرضے واپس نہ کرنے جیسے بیانات نے عمران خان کی اصلیت کا پول کھول کر رکھ دیا ہے۔