پیر, جولائی 3, 2017

پاکستان ٹیلی ویژن ( پی ٹی وی ) کی خوفناک سازش کے خلاف احتجاج

پاکستان ٹیلی ویژن ( پی ٹی وی ) میں عید کے مزاحیہ مشاعرے ‘‘ ہنسنا منع ہے ‘‘ کے دوران ایک شاعر ‘‘ جواد احمد جواد ‘‘ نے اپنی شاعری میں انتہائی بد تہذیبانہ اور بد تمیزانہ انداز میں ہمارے پشتون بھائیوں اور اور ان کے کلچر جو کہ‘‘ پاکستانی کلچر ‘‘ ہے کا تمسخر اُڑایا ہے ۔۔۔ جس کی ہم تمام پاکستانی پر زور مذمت اور احتجاج کرتے ہیں ۔۔۔ ہم حکومت پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ مزاحیہ شاعری کے پرڈیوسر کو برطرف کیا جائے اور پی ٹی وی چئیر مین کی جواب طلبی کی جائے ۔اور اس بدتمیز شاعر پر
تاحیات پی ٹی وی پر شاعری کرنے پر پابندی لگائی جائے ۔۔۔

پاکستان ٹیلی ویژن ( پی ٹی وی ) کو پاکستان کو لسانی بنیادوں پر تقسیم کرنے والے پروگرامز ، افراد پر سختی سے پابندی عائد کرنی چاہئے ۔۔۔ دیکھا جائے تو یہ کوئی معمولی واقع نہیں ہے ۔۔۔ اس سے صرف پختون بھائیوں ہی کے جزبات مجروح نہیں ہوئے بلکہ پوری پاکستانی قوم کے جزبات مجروح ہوئے ہیں ۔اس لئے اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے۔پختون ہوں ، بلوچی ہوں، پنجابی ہوں ، سندھی ہوں ، سرائیکی ہوں یا کہ کسی اور زبان سے متعلق ہوں ۔۔۔ ہم سب پاکستانی ہیں اور ہمارا کلچر پاکستانی ہے ۔۔۔۔ لسانی بنیاد پر تقسیم کرنے والوں ملک دشمن عناصر چاہے وہ کوئی بھی کیوں نہ ہو ۔۔۔۔ ہم اس کی پر زور مذمت اور بھرپور احتجاج کرتے ہیں

مزاحیہ شاعری کے بہت سے طریقے ہیں ۔۔۔ مگر ان جیسے جاہل شاعروں کو یاد رہنا چاہئے کہ مزاح اور طنز میں بڑا فرق ہوتا ہے ۔۔۔ مزاح برداشت ہو سکتا ہے ۔۔ طنز نہیں اور طنز بھی ایسا جس میں پاکستانی افراد کو تضحیک کا نشانہ بنایا جائے ۔۔۔ یہ کسی صورت بھی قابل قبول نہیں ہے ۔

جیسے پنجابی ہماری مادری زبان ہے اسی طرح پشتو بھی ہماری مادری زبان ہے اسی طرح سندھی ، بلوچی ، سرائیکی اور دئگر پاکستان میں بولی جانے والی زبانیں ہماری مادری زبان ہیں۔۔کیونکہ پاکستان ہماری ماں ہے اور اس ماں کی گود میں ہم سب پلے بھڑے ہیں ۔۔۔ ہم کبھی بھی برداشت نہیں کریں گے
کہ کسی بھی طریقے سے ہمارے درمیان تفرقہ ڈالنے یا ڈلوانے کی کوشش کی جائے ۔۔۔

1 تبصرہ:

  1. شکریہ نجیب بھائی، میرے چھوٹے سے نوٹس پرآپ نے قلم اُٹھا لیا۔

    جواب دیںحذف کریں