بدھ, اکتوبر 25, 2017

بھٹو ایک مکار اور مداری سیاستدان

بھٹو ایک مکار اور مداری سیاستدان تھا
۔۔۔ پاکستان کو دولخت کرنے میں اس کردار تھا
۔۔۔پاکستان کی ابھرتی معشیت کا بیڑا غرق اس نے کیا
۔۔۔پاکستان کے نیچے سے اوپر لیول تک سیکورٹی اداروں کو عوام کے ہاتھوں اس نے ذلیل کروایا
۔۔۔رینجرز کے مقابل اس نے اپنی ذاتی فورس ‘‘ ایف ایس ایف ‘‘ کے نام سے تشکیل دی جس نے تمام قوانین کو بالائے طاق رکھ کر اپنے مخالفوں کا بے رحمانہ قتل کیا اور نو ستاروں کی تحریک کے دوران درجنوں بے گناہ لوگوں کو مروایا
۔۔۔گھر بیٹھے شریف لوگوں کو گمشدہ کرنا اس کے دور میں شروع ہوا ۔۔۔ ان میں سے بہت سے لوگوں کا آج تک پتہ نہ چل سکا۔۔۔ دہائی دیتے دیتے ان کی نسلیں بھی قبروں میں جا سوئیں
۔۔۔اس کے دور میں اسی کے چہیتے پنجاب کے گورنر غلام مصطفے کھر نے کالج میں پڑھنے والی شریف زادیوں کو راتوں میں ہوسٹل سے اغوا کر کے گورنر ہاؤس میں ان کے ساتھ زنا بالجبر کیا ۔۔۔ ان میں سے کچھ لڑکیوں نے خود کشی بھی کی
۔۔۔۔اس کے دور میں آٹا ، گھی ، چینی ، مٹی کا تیل اور دیگر اشیاء راشن ڈپوؤں پر راشن کارڈ پر ،لتی تھیں ۔۔ میرے سمیت پورا پاکستان کو ان کھانے پینے اور ضروریات زندگی کی چیزیں لینے کے لئے گھنٹوں ذلیل و خوار ہونا پڑتا تھا
۔۔۔شملہ معاہدہ اور قوام محتدہ میں جان بوجھ کر کشمیر ریزولیشن کی کاپی پھاڑ نے کا ڈرامہ کر کے کشمیر کاز کو نقصان پہنچانے کا جتنا ذمدار یہ بھٹو مداری تھا اور کوئی نہیں ہوگا۔
۔۔۔ابھی اس مداری کے پاکستان کا بیڑا غرق کرنے کا اتنا مواد ہے کہ درجنوں کتابیں لکھی جا سکتی ہیں ۔۔۔ اس لئے انہی پر گزارا کیجئے

کوئی تبصرے نہیں:

ایک تبصرہ شائع کریں